fbpx
Kahani News

ان پاکستانیوں کے وہ چند ایک کارنامے جوکہ ساری دنیا میں موجود کوئی اور کرکٹ کا کھلاڑی نہ کر سکا

دوستو اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ کرکٹ کی دنیا میں بلکل ایسے ہی گلیمر ہے جیسے کہ کسی فلم انڈسٹری میں ہوتا ہے  بلکہ میں اس تھوڑا سا اضافہ کرنا چاہوں گا کہ شاید فلم انڈسٹری میں اب اتنا زیادہ گلمر نہ ہو جتنا کہ اس وقت یا اس سے پہلے بھی کرکٹ کی دنیا میں تھا -آج سے 30 سے 35 سال پہلے بھی کرکٹر کو وہی عزت ملتی تھی جتنی کہ آج مل رہی ہے

سب سے بڑھکر کہ کرکٹ اور شوبز کا آپس مین ہمیشہ سے ہی ایک گہر تعلق رہا ہے اور اس کی اہمیت کسی دور میں بھی کم نہیں ہوئی ہے جیسا کہ پہلے عمران خان کے دور میں اداکارائیں ان پر بہت زیادہ دل پھینکتی تھی بلکل ایسے ہی بعد میں انڈیا اور پاکستان کی اداکارائیں شاہد آفریدی اور شعیب اختر پر اپنا دل پھینکا شروع ہو گئی اور یہ سلسلہ ابھی تک جاری و ساری ہے

اگر ہم بات کریں کہ کس کرکٹ کے کھلاڑی نے اپنے ملک سے باہر دوسرے ملکوں مین شادیاں کی ہوئی ہیں تو اس سلسلے مین بھی پاکستانی کرکٹرز دوسرے ملکوں کے کرکٹرز سے نمبرز لیتے ہوئے نظر آتے ہیں – آج ہم آپ سے پاکستان کے کچھ ایسے کرکٹرز کے بارے میں بتائیں گے جنہوں نے اپنے ملک مین نہیں بلکہ دوسرے ملکوں میں شادیاں کی ہوئی ہیں

کرکٹر حسن علی اور سامعیہ آرزو کی شادی پاکستانی کرکٹر اور غیر ملکی لڑکیوں کی شادی کی فہرست میں تازہ ترین اضافہ ہے اور اس وقت ہر طرف ان دونوں کی شادی کی باتیں ہی چل رہی ہیں-لیکن یہ پہلا موقع نہیں جب کسی پاکستانی کھلاڑی نے کسی غیرملکی لڑکی کے ساتھ شاد ی رچائی ہو۔ اس سے پہلے بھی کئی پاکستانی کرکٹرز نے غیر ملکی لڑکیوں سے نا صرف شادیاں کیں بلکہ کافی کامیاب بھی رہیں۔

حسن علی اور سامعیہ آرزو

ناظرین۔ اس فہرست میں تازہ ترین حسن علی اور سامعیہ آرزو کی شادی ہے۔ ایک انڈین گھرانے سے تعلق رکھنے والی سامعیہ آرزو پچھلے کئی عرصے سے اپنے والدین کے ساتھ دُبئی میں رہائش پذیر ہیں ۔ انہوں نے انگلینڈ کی ایک مشہور یونیورسٹی سے ڈگری حاصل کی اور ایک نجی ائیرلائن میں کام کرتی ہیں۔ حسن علی اور سامعیہ کی پہلی ملاقات حسن علی کے ایک دوست کے ذریعے سے ہوئی تھی ۔ حسن علی پہلی ہی ملاقا ت میں سامعیہ کو اپنا دل دے بیٹھے۔ انہوں نے اس بات کا اظہار اپنے بھائی اور بھابی سے کیا اور یوں انکے لیے محبت سے شادی تک کا سفر نہایت آسان ہوگیا۔

یوں تو حسن علی کی بیوی سامعیہ آرزو کرکٹ کے بارے میں کچھ نہیں جانتی ہیں لیکن انکا کہنا ہے کہ وہ شادی کے بعد کرکٹ دیکھیں گی لیکن صرف اپنے شوہر کو دیکھنے کیلئے ۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ حسن علی اپنی بیگم کو پاکستان میں رکھتے ہیں یا وہ بھی شعیب ملک کی طرح دُبئی میں ایک عالی شان گھر خرید کر وہاں رہائش رکھتے ہیں۔

شعیب ملک اور ثانیہ مرزا

پاکستانی کرکٹر شعیب ملک اور انڈین ٹینس سٹار ثانیہ مرزا کی رومانس کی داستانیں جب میڈیا کی زینت بنیں تو بہت سارے لوگوں کیلئے یہ ایک حیران کن خبر تھی کیونکہ پاکستان اور انڈیا کے درمیان کی ٹینشن ہمیشہ سے ہی موجود رہی ہے اور ایسی صورت میں ایک اور بھارتی دلہن لے کر آنا آسان نہیں تھا لیکن ملک اور ثانیہ مرزا کی محبت نے اس کو سچ کردکھایا۔

شعیب ملک اور ثانیہ مرزا کی پہلی ملاقات 2004 میں ہوبارٹ کے مقام پہ ہوئی لیکن شعیب ملک اپنی ملاقات میں ہی ثانیہ مرزا کو دل دے بیٹھے اور دوسری طرف ثانیہ مرزا بھی پاکستانی اسٹار کی گرویدہ ہوگئیں۔ یوں ٹینس اسٹار اعصام الحق اور کرکٹر ظہیر خان بھی ثانیہ مرزا سے شادی کرنے کے خواہش مند تھے لیکن ثانیہ پہلے ہی سیالکوٹی لڑکے کو دل دے بیٹھی تھیں۔

چناچہ 2010 میں انکی شادی سرانجام پائی۔ اس شادی کو رکوانے کیلئے دونوں کرکٹرز کو بہت ساری دھمکیاں بھی موصول ہوتی رہیں اور اسکے بعد جب انکا ایک بیٹا پیدا ہوا تو بہت سارے سوالات اُٹھائے گئے کہ لڑکا پاکستانی شہری ہوگا یا انڈین؟ یوں تو ثانیہ مرزا کبھی کبھی پاکستان آتی رہتی ہیں لیکن یہ جوڑی دُبئی میں ہی ایک عالی شان گھر میں رہائش پذیر ہے ۔

محمد عامر اور نرگس
محمدعامر کو اس وقت پاکستان کرکٹ ٹیم کا سب سے بہترین بولرماناجاتا ہے اور کرکٹ کا شاید ہی کوئی فین جو اسکی وجہ نا جانتا ہو۔ اس باصلاحیت کھلاڑی نے کرکٹ میں اپنی انٹری 2009 میں کی اور آتے ہی چھاگئے لیکن 2010 میں سپاٹ فکسنگ اسکینڈل کی وجہ سے جہاں ان پہ برطانیہ کی عدالت میں ایک کیس چل رہا تھا وہیں انہوں نے ایک برطانوی حسین وکیل نرگس کو اپنی پیروی کرنے کیلئے Hire کیا۔ نرگس محمدعامر کو سزا سے تو نا بچا سکیں لیکن انہوں نے دل جیت لیا۔

محمدعامر اور نرگس دونوں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہوگئے اور بعد میں ان دونوں نے اس کو ایک کامیاب شادی میں تبدیل کردیا۔ اس وقت یہ دونوں برطانیہ میں ہی مقیم ہیں اور اپنے ایک بیٹے کے ساتھ ہنسی خوشی زندگی گُزار رہے ہیں۔

وسیم اکرم اور شنیرا اکرم

سوئنگ کے سلطان وسیم اکرم کی شنیر اکرم کے ساتھ دوستی اور پھر شادی کی داستان دوسرے کرکٹرز سے زیادہ رومانوی اور رنگین ہے۔ ویسے تو وسیم اکرمرنگین مزاجی کی وجہ سے وسیم اکرم اکثرخبروں کی زینت بھی بنےرہتے تھے لیکن وسیم اکرم کی پہلی شادی سال 1995 میں ہما مفتی کے ساتھ ہوئی لیکن بدقسمتی سے 2009 میں وسیم اکرم کی پہلی بیوی ہما مفتی انتقال کرگئیں۔

لیکن پھر دوسال بعد ہی وسیم اکرم نے ایک شنیرا نامی آسٹریلوی خاتون کو اپنا دل دے بیٹھے۔ایک جس کو وسیم اکرم نے ایک محفل کے دوران دیکھا اور پھر انکو اس خاتون کے علاوہ اور کوئی نا بھایا۔ وسیم اکرم پہلی نظر میں انکے دیوانے ہوچکے تھے لیکن باقاعدہ شادی کیلئے  نا کیا اور دو سال تک انکی دوستی اور گہری محبت کے قصے ہر ایک زبان پہ گھومتے رہے ۔

بالاخر 2013 میں وسیم اکرم نے ایک ہوٹل کی لابی میں اپنے دونوں گھٹنوں پہ جھک کر شنیرا کو شادی کیلئے کردیا جسے شنیر ا نے ہنسی خوشی قبول کرلیا۔ لیکن اس میں سب سے زیادہ بہترین بات یہ رہی کہ شادی سے پہلے شنیرا نے اسلام کو پڑھا، جانا اور اسلام قبول کرلیا ۔ ان دونوں کی شادی سال 2013 میں لاہور میں انجام پائی اور اس وقت یہ دونوں پاکستان میں ہی اپنی ایک بیٹی کے ساتھ رہتے ہیں۔

محسن حسن خان اور رینا رائے
پاکستانی کرکٹر محسن حسن خان اور رینا رائے کا معاشقہ تو اپنے زمانے میں تقریباً ہر پاکستانی اور انڈین کی زبان پہ موجود تھا۔ پاکستان کے سابق کرکٹر اور کوچ انڈین ایکٹریس رینارائے کے عشق میں اس حد تک ڈوب گئے کہ ناصرف ان سے شادی کی بلکہ انکی خاطر انڈیا میں مقیم بھی رہے اور کچھ انڈین فلموں میں بھی کام کیا۔

لیکن بدقسمتی سے ان دونوں کی شادی زیادہ عرصہ نہیں چل سکی کیونکہ محسن کو لگتا تھا کہ رینارائے کے تعلق شتروگن سنہا کے ساتھ بھی ہیں۔ ان دونوں کی ایک بیٹی بھی ہے جو اس وقت اپنی ماں کے ساتھ ممبئی میں ہی مقیم ہے۔

عمران خان اور جمائما خان
اس فہرست میں سب سے پہلے نمبر پہ دُنیا کی مشہور ترین جوڑیوں میں شمار کی جانے والی عمران خان اور جمائما خان کی کہانی ہے۔ اپنے زمانے میں گولڈن بوائے کے نام سے مشہور، بہت سارے سکینڈلز میں ملوث قرار دئیے جانے والے، 92 ورلڈ کپ کے فاتح اور پاکستان کے موجود وزیراعظم عمران خان کی محبت کی اس کہانی کو لوگ اب تک سراہتے ہیں۔

جمائما گولڈ سمتھ برطانیہ کے ایک امیر ترین شخص جمائما گولڈسمتھ کی بیٹی تھیں اور انکے انٹریوز کے مطابق وہ ہمیشہ سے ہی عمران خان کی طرف مائل تھی۔ بالاخر سال 1995 میں انکی پہلی ملاقات ہوئی اور اسی سال دونوں نے شادی کرنے کا فیصلہ بھی کرلیا۔ شادی کی تقریب پیرس میں ہوئی جس میں دُنیا کے نامی گرامی ارب پتیوں نے شرکت کی۔

جمائما نے اس تقریب میں عمران خان کے کینسر ہسپتال کیلئے کی درخواست کی۔ اسکے بعد یہ دونوں پاکستان منتقل ہوئے اور انکے دو بیٹے بھی پیدا ہوئے لیکن سال 2004 میں دونوں نے ایک دوسرے علیحدگی کا فیصلہ کیا لیکن اسکے بعد لوگوں نے دیکھا کہ یہ علیحدگی صرف جسمانی تھی کیونکہ جمائما اپنا دل پاکستان ہی چھوڑ کر جاچکی تھیں اوربعد میں انہوں نے عمران خان کو مختلف اسکینڈلز سے بھی نکلوانے میں اہم کردار ادا کیا۔ اور اب تک جب بھی پاکستان کی بات ہو اپنے ٹویٹر پہ ٹویٹ کیے بنا نہیں رہ پاتی۔

دوستو امید کرتے ہیں آپکو آج کی ویڈیو پسند آئی ہوگی۔ اپنی رائے کا اظہار کمنٹ سیکشن میں لازمی کریں اور اگر آپ نے ابھی تک ہمارا یہ چینل سبسکرائب نہیں کیا تو جلدی سے سبسکرائب کرلیں اور ساتھ موجود گھنٹی کے بٹن کو بھی دبادیں۔ شکریہ۔

Leave a Comment