مشرفی مرتضیٰ نے پاکستان جا کر کھیلنے کا اعلان کردیا

انگلینڈ میں ہوئے سروے میں پاکستا ن کو 2020 میں سیاحت کیلئے سب سے بہترین ملک قرار دیدیا گیا۔

لیکن دوسری جانب بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے نخرے ختم ہونے کا نام نہیں لے رہے۔

بنگلہ بورڈ کی جانب سے کبھی ٹیسٹ نا کھیلنے اور کبھی پہلے ٹیسٹ سیریز کھیلنے اور بعد میں ٹی ٹونٹی سیریز کھیلنے کا منصوبہ سامنے آجاتا ہے۔

پاکستان اور بنگلہ دیش کی ٹی ٹونٹی سیریز کو شروع ہونے میں اب چند دن ہی باقی ہیں لیکن

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کی جانب سے ابھی تک دورے کو حتمی شکل نہیں دی جارہی۔

آئی سی سی کی سیکیورٹی ٹیم کی تسلی کے باوجود بنگلہ دیش کی جانب سے یہ نخرے دال میں کچھ کالے کی طرف اشارہ کررہے ہیں۔

مزید پڑھیں: آسٹریلیا کی انڈیا کے ون ڈے دورہ کیلئے 18 رکنی سکواڈ کا اعلان

کچھ لوگوں کے مطابق بنگلہ دیش بورڈ پہ بھارتی بورڈ کی جانب سے خفیہ دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

لیکن وہیں دوسری جانب بنگلہ دیش کے اپنے مایہ ناز کھلاڑی مشرفی مرتضیٰ کا بیان بھی سامنے آگیا ہے۔

مشرفی مرتضیٰ کے مطابق اگر وہ ٹی 20 اور ٹیسٹ فارمیٹ کا حصہ ہوتے تو پاکستان کا دورہ ضرور کرتے۔

انکا کہنا تھا کہ اگر میں ٹیم میں موجود ہوتا تو میں پاکستان جانے کیلئے لازمی ہاں میں جواب دیتا۔

مزیدپڑھیں: کرکٹرز کی استعمال کردہ فروخت ہونے والی مہنگی ترین چیزیں

اسکے لیے چاہے مجھے اپنی فیلمی سے اجازت لینی ہوتی یا نہیں۔

پاکستان کا دورہ کرنے والے تمام کھلاڑیوں کی جانب سے پاکستان کو محفوظ ملک قرار دیا گیا ہے۔

اسکی سب سے بڑی نشانی پاکستان کا خود پی ایس ایل کے تمام میچ پاکستان میں کروانا ہے۔

اگر پاکستان میں کسی بھی طرح کی کوئی سیکیورٹی پرابلم ہوتی تو پاکستان کبھی بھی غیرملکی کھلاڑیوں کی جانب کو خطرہ میں ڈالتے ہوئے پی ایس ایل کو پاکستان میں مت کرواتا۔

اب بنگالی بورڈ کی جانب سے یہ تاخیر کس وجہ سے ہے اسکے بارے میں کوئی حتمی رائے نہیں دی جاسکتی۔

لیکن اس بات کو بھی نظرانداز نہیں کیا جاسکتا ہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ ماضی میں بھی بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کو پاکستان آکر کھیلنے سے خفیہ طور پہ منع کرچکا ہے۔

You May Also Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *