اس کو تو کھڑا ہونا نہیں آتا ہے بیٹنگ یہ خاک کرے گا

دوستو فواد عالم کا نام ایک عرصہ تک شائقین کی زبان پر رہا اور صرف اس کے لیے شائقین ایک ہی بات دوہراتے رہے کہ وہ ایک اچھا کھلاڑی ہے لہذا اس کو نیشنل ٹیم میں شامل ہونا چاہیے اور ان کو نیشنل ٹیم ایک موقع ملنا چاہیے – تمام شائقین اور اب تو پاکستان کرکٹ ٹیم سے تعلق رکھنے والے بڑا بارے نام بھی فواد عالم کے لیے کھڑے ہو گئے تھے اور بار بار کرکٹ بورڈ پر دباؤ ڈال رہے تھے کہے فواد عالم کو پاکستان کرکٹ ٹیم کا حصہ بنایا جائے جس پر کرکٹ بورڈ انگلنڈ روانہ ہونے والی ٹیم کے اندر فواد عالم کو رکھ لیا

اس پر سارے پاکستان میں جتنے بھی کرکٹ سے پیار کرنے والے لوگ ہیں انھوں نے کرکٹ بورڈ کا شکریہ کیا اور فواد عالم کے لیے دعائیں بھی کیں کہ اب وہ اس سیریز میں کوئی اچھی کارکردگی دکھا سکے – دوستو یہاں پر آپ کو ایک بات بتاتے جینے کہ فواد عالم کا فرسٹ کلاس ریکارڈ بہت اچھا ہے اور اسی وجہ سے فواد عالم کو نیشنل ٹیم میں موقع دیا گیا ہے

مگر جب پاکستان کرکٹ ٹیم نے اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلا تو اس میں فواد عالم کا نام نہیں تھا جس پر پوری قوم ایک دفعہ پھر سراپا احتجاج ہو گئی اور پھر رہی سہی کسر تب نکل گئی جب پہلے ٹیسٹ میچ کی دوسری انننگز میں ساری کی ساری بیٹنگ لائن اپ فلاپ ہو گئی – تب پھر پورے پاکستان میں ہر طرف سے صرف ایک آواز تھی کہ فواد عالم کو پاکستان کرکٹ ٹیم کا حصہ بنایا جائے

دوستو یہ تو تھی وہ کوشش جو ساری قوم نے اور پھر سابقہ کھلاڑیوں نے مل کر فواد عالم کے لیے کی اور پھر فواد عالم کو دوسرے ٹیسٹ میچ میں شامل کر لیا گیا – مگر جیسے ہی فواد عالم اپنی بیٹنگ کے نمبر پر بیٹنگ کرنے آئے تو پھر معملات اور خراب ہو گئے – جی ہاں دوستو دوسرے ٹیسٹ کی پہلی انننگز میں فواد عالم صفر پر آوٹ ہو گئے

اور پھر اس سے بھی بڑی بات یہ ہے کہ تمام کے تمام لوگ اس کے کھڑے ہونے کے سٹائل پر تنقید کرنے لگ گئے – حالانکہ فواد عالم نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں اسی سٹائل میں بیٹنگ کر کے اتنا زیادہ سکور کیا ہے – مگر بہت سارے لوگ اور کچھ تجزیہ نگار بھی فواد عالم کے اس سٹائل سے بیٹنگ کرنے کی خلاف ہوگئے ہیں – کچھ تجزیہ نگاروں کا یہ کہنا ہے کہ اس سٹائل کی وجہ سے بیٹسمن کے ایل بی ڈبلیو آوٹ ہونے کا خدشہ بہت زیادہ ہے

اور اگر دیکھا جائے تو فواد عالم اس میچ میں بھی ایل بی ڈبلیو ہی آوٹ ہوا ہے – اگر ان کے کھڑے ہونے کے سٹائل کی بات کریں تو بیٹنگ کے دوران اپنی پوری وکٹس چھوڑ دیتے ہیں اور لیگ سٹیمپ سے باہر کھڑے ہوتے ہیں – اور اس کے بعد جیسے ہی بولر گیند کو اپنے ہاتھ سے چھوڑتا ہے تو وہ فورا وکٹس کے آگے آ جاتے ہیں –

اگر ہم بات کریں ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بیٹنگ کوچ یونس خان کی تو وہ فواد کو اس طریقے سے بیٹنگ کرتے ہوئے دیکھ چکے ہیں اور ایسا لگتا ہے کہ ان دونوں کو فواد عالم کے اس بیٹنگ سٹائل سے کوئی مسئلہ نہیں ہے – لیکن سنے میں آ رہا ہے کہ جب فواد عالم سے اس سٹائل کے بارے میں ایک کھلاڑی نے پوچھا تو فواد نے کہا کہ وہ پہلے دن سے ایسے ہی بیٹنگ کرتے چلے آ رہے ہیں

مزید پڑھیں: بابر اعظم کے بغیر آئی پی ایل نامکمل ہے

خود فواد عالم نے بھی بتایا کہ انھوں نے اس سٹائل کے جوالے سے وہ ویسٹ انڈیز کے کھلاڑی چندر پال سے بھی بات کر چکے ہیں جس پر انہیں نے فواد عالم کی اس سٹائل پر حوصلہ افزائی کی – اگر ہم بات کریں چندر پال کی تو وہ بھی اسی طرح کے منفرد سٹائل کے ساتھ وکٹ پر کھڑے ہوا کرتے تھے اور وہ بھی ویسٹ انڈیز کے ایک خاص بیٹسمن رہ چکے ہیں

You May Also Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *