اگر آپ اگلے 2 ٹیسٹ میچ جیتنا چاہتے ہو تو اس کھلاڑی کو ضرور شامل کرو-وسیم اکرم

جیسا کہ آپ بخوبی جانتے ہیں کہ پاکستان کرکٹ ٹیم اولڈ ٹرافولڈ میں اپنا پہلا جیتا ہوا میچ ہار چکی ہے جس کا ہر پاکستانی کو بہت ہی زیادہ دکھ ہے – دوستو جیسا کہ آپ سب جتنے ہیں کہ پاکستان کی بیٹنگ دوسری انننگز مین کچھ زیادہ اچھا سکور نہیں کر سکی تھی اور بڑے دکھ کی بات ہے کہ ہماری ساری بیٹنگ لائن اپ سے زیادہ سکور ہمارے سپنر بولر یاسر شاہ نے کیا تھا جس کا سکور تقریبا 0 3 سے زیادہ تھا

بات کرنے کا مطلب یہ ہے کہ دوسری ٹیموں کی اگر اوپنر بیٹنگ کرنے مین فلاپ ہو جائے تو اس ٹیم کی مڈل آرڈر آ کر ٹیم کو سنمبلا دیتی ہے اور میچ کو ہارنے سے بچاتی ہے مگر پاکستان کرکٹ ٹیم میں پہلی انننگز میں بھی کچھ ایسا ہی دیکھنے کو ملا تھا اور پھر دوسری انننگز میں بھی اس سے برا حال ہوا تھا –

اگر ہم پہلی اننگز کی بات کریں تو اگر بابر اعظم پہلی انننگزمیں اچھے کھیل کا مظاہرہ نہیں کرتا ہے تو پھر آپ سوچ سکتے ہیں کہ ہمارا میچ میں کیا حال ہوتا -اور یہاں پر ہم صرف ایک بات کیں گے کہ اگر بابر اعظم پہلی انننگز میں اچھا کھیل پیش نہ کرتا تو پھر کبھی بھی شان مسعود بھی سنچری سکور نہ کر پتا شان مسعود کی سنچری کرنا بابر اعظم کے اچھے کھیل کی وجہ سے ممکن ہوا ہے

لیکن اب اگر ہم بات کریں وسیم اکرم کی تو انھوں نے نے بڑے واضع الفاظ مین کہا ہے کہ اگر اب پاکستان ٹیم چاہتی ہے کہ وہ اگلے 2 میچز میں اپنی پوزیشن ٹھیک رکھے تو پھر ان کو ایک مظبوط مڈل آرڈر کی ضروت ہے اور اس کے لیے ان کو فواد عالم کو ٹیم مین رکھنا پڑے گا بلکہ ان کو رکھنا چاہیے – دوستو یہاں پر آپ کو ایک اور چیز بتاتے جائیں کہ یہ وہی فواد عالم ہے جوکہ پچھلے دس سالوں سے پاکستان کرکٹ ٹیم کی مینجمنٹ کا ظلم کا نشانہ بنا ہوا ہے

اس کے ساتھ بلکل ویسا ہی سلوک کیا جا رہا ہے جیسا سلوک پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز بلے باز عاصم کمال کے ساتھ کیا گیا تھا -عاصم کمال کی بات ہم پھر کبھی کریں گے مگر آج ہم فواد عالم کی بات کریں گے – فواد عالم کے متعلق ڈاکٹر نعمان پچھلے 2 ہفتوں سے کہ رہے ہیں کہ اس لڑکے کو چانس دیں – انھوں  نے فواد عالم کی فرصت کلاس کی کارکردگی اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر شیئر کی ہے –

بس یہی نہیں ڈاکٹر نعمان نے اس کی کارکردگی کا بہت سارے اچھے بیٹسمنوں سے موازنہ بھی کیا ہے جس پر فواد عالم ان سے اچھا ہے مگر اس بات کی ملکل بھی سمجھ نہیں آتی ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کی مینجمنٹ فواد عالم کو پلیئنگ الیون کا حصہ کیوں نہیں بناتی ہے – مگر اس دفعہ وسیم اکرم نے نے بھی کھل کر فواد عالم کی سپورٹ کی ہے کہ اس کو ہر صورت میں اگلے ٹیسٹ میچ میں پلیئنگ الیون کا حصہ ہونا چاہیے

اسکے ساتھ ساتھ وسیم اکرم نے یہ بھی کہا کہ اب اگلے 2 ٹیسٹ متچوں مین آپ کو ٹرننگ وکٹ نہیں ملے گی اور آپ کو صرف ایک سپنر بولر کے ساتھ کھیلنا پڑے گا  اور پھر اس کے ساتھ آپ کو ایک اور بیٹسمن کی بھی ضروت بڑے گی جس کے لیے وسیم اکرم نے کہا ہے کہ آپ کو فواد عالم کو پلیئنگ الیون کا حصہ بنانا چاہیے

مزید پڑھیں: اتنی مضبوط پوزیشن ہونے کے باوجود صرف پاکستان ہی میچ ہار سکتا ہے-رمیض راجہ

انھوں نے مزید کہا کہ فواد عالم کی فرصت کلاس میں ایوریج 50 رنز کی ہے اور اس بنا پر فواد عالم کو اس دفعہ ٹیسٹ میچ مین ایک موقع ضرور ملنا چاہے – وسیم اکرم نے مزید کہا کہ اگر وہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان ہوتے تو پھر وہ فواد عالم جیسے بلے باز کو پلیئنگ  الیون کا حصہ ضرور بناتے – اس کے علاوہ وسیم اکرم یہ بھی کہا کہ ہماری ٹیم نے پہلے ٹیسٹ میچ میں کافی زیادہ غلطیاں کی ہیں جوکہ دوسرے ٹیسٹ میں نہیں ہونی چاہییں

You May Also Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *