شکریہ عمران خان ! کرکٹ کو بچانے کیلیے انوکا اقدام

پرائم منسٹر عمران خان نے پی سی بی کو کرپٹ لوگوں سے بچانے کے لیے کچھ نئے اقدام کیے ہیں ان اقدام کو استعمال کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کا انٹی کرپشن یونٹ پہلے سے زیادہ پاورفل ہو جائے گا – اور اس پاور کو استعمال کرتے ہوئے انٹی کرپشن اور سیکورٹی یونٹ بڑی آسانی سے تمام پی سی بی ملازمین کی منی ٹریلر کو دیکھ سکے گا اور اگر اس میں کوئی گڑ بڑ نظر آئے تو اس ملازم کے خلاف کروائی بھی کر سکے گا – یہ بات یہاں پر ہی ختم نہیں ہوتی ہے بلکہ کرپٹ لوگوں کے خلاف ریڈ بھی کر سکے گے

کیا آپ کو پتا ہے کہ عمران خان پاکستان کرکٹ بورڈ پیٹرن ان چیف بھی ہیں اور انہوں نے پچھلے دنوں احسان مانی سے ملاقات کی ہے جس میں انھوں نے پاکستان کے دورہ انگلینڈ کے بارے میں بات کی – اس ملاقات کے دوران احسان مانی نے پرائم منسٹر عمران خان سے دورہ انگلینڈ کے لیے اجازت بھی طلب کی جس پر عمران خان نے دورہ انگلینڈ کے لیے پاکستانی ٹیم کو جانے کی اجازت بھی دیدی ہے

اس معاملے کو لیکر کر ہر کوئی کافی فکر مند تھا کہ ہو سکتا ہے کہ شاید عمران خان پاکستانی کرکٹ ٹیم کو دورہ انگلینڈ پر روانہ نہ ہونے دیں جس کی مین وجہ کرونا ہے – آپ لوگ جانتے ہیں کہ کرونا کی وجہ سے پوری دنیا میں عجیب قسم کے حالت پیدا ہو چکے ہیں اور ہر کوئی اپنی جان بچانے کے پیچھے ہے – البتہ جب یہ معاملہ عمران خان کے سامنے رکھا گیا تو انہوں مناسب انتظامات کے ساتھ ٹیم کو انگلینڈ جانے کی اجازت دے دی ہے

جہاں تک بات ہے نئے قوانین کی تو جب وہ ڈرافٹ پرائم منسٹر عمران خان کے سامنے رکھا گیا تو انہوں نے اس کی تعریف کی اور احسان مانی کو اس کی تاکید کہ جتنی جلدی ہو سکتا ہے اس کو فائنل شکل میں لے کر آئیں – عمران خان نے مزید کہا کہ کام سے متعلقہ جو جو بھی منسٹرز ہیں ان سے مل کر اس کی منظوری لیں اور اس کے بعد اس کو جلد از جلد پارلیمنٹ میں پیش کر کے اس کو باقاعدہ ایک قانون کا درجہ دیا جائے

اس نئے قانون کے مطابق پی سی بی ان تمام آفیشلز اور کھلاڑیوں کے خلاف بھرپور کاروائی کر سکتا ہے جو لوگ میچ فکسنگ اور سپاٹ فکسنگ میں ملوث میں ہونگے اور ان کو جیل بھی بھیجا جا سکتا ہے – عمران خان نے اس قانون کو بنانے کی کوشش کو بہت زیادہ سراہا ہے اور یہ امید ظاہر کی ہے کہ اس کو جلد از جلد مکمل کر کے ان کی ٹیبل پر پہنچا دیا جائے گا

مزید پڑھیں: عظیم پاکستانیوں کے وہ 20 ریکارڈ جو آج تک کوئی نہیں توڑ سکا

جب یہ قانون بن جائے گا تو یقینا وہ تمام  لوگ جو پی سی بی میں ہے اور اس کا غلط استعمال کرتے ہیں وہ بلا شبہ اس قانون کے بننے کے حق میں نہیں ہونگے اور ان کی کوشش ہو گی کہ وہ اس قانون کے بننے کی رہ میں رکاوٹ ڈالیں اور ہر طرح کی کوشش کریں جس سے یہ قانون نہ بن سکیں – لہذا اس کے لیے احسان مانی کو چاہیے کہ اگر انھوں نے ان کرپٹ لوگوں کے خلاف ایکشن لینے کا فیصلہ کر لیا ہے تو وہ ثابت قدم رہیں اور ان تمام کرپٹ لوگوں کو ان کے انجام تک پہنچا کر ہی دم لیں

دوستو کیا آپ سمجھتے ہیں یہ قانون پاس ہو جائے گا اور اگر پاس ہو گیا تو پی سی بی اس قانون کو اچھے طریقے سے لاگو کر سکے گے – تمام دوست کمنٹ میں اپنی رائے ضرور دیں – شکریہ

You May Also Like

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *